شیخ رشید نے شہباز شریف کو مناظرے کا چیلنج دے دیا

وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کو مناظرے کا چیلنج دے دیااورکہاکہ ن لیگی صدر جیو پر آجائیں،ثابت کروں گا وہ این آر او چاہتے ہیں۔

پروگرام ’نیا پاکستان، شہزاد اقبال کے ساتھ گفتگو میں شیخ رشید نے اپنی حکومت کو وارننگ دی اور کہا کہ شہباز شریف کو چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی لگانے والے پچھائیں گے۔

ان کا کہناتھاکہ شہبازشریف این آر او کے متلاشی ہیںاور اس پر بھرپور انداز سے کام ہورہا ہے،عمران خان کا حقیقی دوست ہوں انہیں ہمیشہ صحیح مشورہ دوں گا۔

وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ سگار کی طرح این آر او کی بھی 5 سے 6 قسمیں ہیں،انہوں نے پہلی سیڑھی پر قدم رکھا ہے، وکٹ کے دونوں طرف کھیل رہے ہیں،مجھے تاش کھیلنا نہیں آتا ۔

انہوں نے کہا کہ ریمانڈ کے دوران شہبازشریف کو چیئرمین پی اے سی بنانا درست نہیں،نیا پاکستان میں یہ نہیں ہونا چاہیے کہ قلندر باہر پھریں اور قانون کے تحت چور پارلیمنٹ کے اندر جائیں۔

شیخ رشید نے کہا کہ یہ چوری بھی کریں ،اپوزیشن لیڈر بھی بنیں ،اسپیکر کافیصلہ ہے میں کچھ نہیں کہتا ،عمران خان کے ساتھ کھڑا ہوں لیکن حکومتی فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ جارہا ہوں۔

ان کا کہناتھاکہ پاناما کا کیس لڑااب دوسرا لڑنےجا رہاہوں ،حدیبیہ اورایل این جی کیس میں پیش ہوں گا،کوئی راضی ہویا خفاہو،سانپ اور شہباز شریف اکٹھے آرہےہوں تو پہلے سیاسی طورپر شہباز شریف کومارو،ان کی اولادیں دنیا کے مہنگے ترین علاقوں میں رہتی ہیں۔

وزیر ریلوے نے مزید کہاکہ ایک دن یہ سب پچھتائیں گے ،لعنت ہےایسےنظام پرجس میں چور،چوکیدارایک ہی صف میں کھڑےکردیےگئے،اگر یہ نظام چلتا تو یہ جیل میں ہوتے ،ای سی سی میں رزاق داودسے نوک جھونک چلتی رہتی ہے ، چور چاہے اس طرف کا ہو یا میری طرف کا، نہیں بچنا چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں