ہیلی کاپٹر کیس چلا کر نیب، وزیر اعظم کی توہین کر رہا ہے، فواد چوہدری

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے ملک کے وزیر اعظم عمران خان کے خلاف خیبر پختونخوا ہیلی کاپٹر کیس چلانا زیادتی ہے اور وہ اس طرح وزیر اعظم کی توہین کر رہا ہے۔

نجی چینل ‘جیو نیوز’ کے پروگرام ‘کیپیٹل ٹاک’ میں بات کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ عمران خان کے خلاف ہیلی کاپٹر کیس میں باقاعدہ چارج نہیں لگایا گیا، جبکہ نیب کی جانب سے کیسز چلانا وزیر اعظم اور پاکستان کے نظام کی توہین ہے۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے خلاف کیسز توہین نہیں بلکہ وزیراعظم پر بنائے گئے کیس پر دنیا نیب پر ہنس رہی ہے۔

اعظم سواتی کے حوالے سے فواد چوہدری نے انکشاف کیا کہ ان کا استعفیٰ منظور نہیں ہوا، اعظم سواتی نے خود استعفیٰ نہیں دیا بلکہ سپریم کورٹ نے لیا، ان کے کیس کو نواز شریف اور ماڈل ٹاؤن کے کیسز سے ملانا زیادتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ملزمان سوٹ ٹائی لگا کر پارلیمنٹ آتے ہیں حالانکہ انہیں جیل میں ہونا چاہیے۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف پر الزام ہم نے نہیں لگایا بلکہ جرمنی کے اخبار میں پاناما کا معاملہ آیا، جبکہ سابق صدر آصف زرداری پر الزام بھی ہم نے نہیں بلکہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے لگائے۔

انہوں نے عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خانم کے متعلق کہا کہ ‘علیمہ باجی کا کاٹن برآمد کرنے کا کام ہے جو 20 سال سے چل رہا ہے۔’

فوجی عدالتوں کے حوالے سے فواد چوہدری نے کہا کہ ‘اصولی طور پر فوجی عدالتیں نہیں ہونی چاہئیں لیکن ہم مخصوص حالات سے گزرے ہیں، تاہم کوشش کریں گے (ن) لیگ اور پیپلز پارٹی سے مل کر مشترکہ حکمت عملی بنائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں